اردو پیڈ اردوای میل اردو لائف ویڈیو محفلِ موسیقی ادبی افق بات سے بات محفلِ مشاعرہ شاعری تصویری کارڈ فلیش کارڈ عید کارڈ سرورق
 رابطہ کریں تلاش کریں

تازہ ترین

شہزاد بیگ
منصور آفاق
 منتخب کلام ،  بزم ِ افتخار عارف ، ہیوسٹن  امریکہ  2012
شامِ فراز، ہیوسٹن ٹیکساس
خوشبیر سنگھ شاد 
فرحت عباس شاہ
افتخار عارف، خصوصی ریکارڈنگ، اسلام آباد
فیض احمد فیض آخری مشاعرہ، برطانیہ
طالب انصاری، واہ کینٹ  پاکستان

خصوصی ویڈیوز

افتخار نسیم کی یاد میںاضافہ
لفظ کو پھول بنانا تو کرشمہ ہے فراز، ڈاکومنٹری
آنکھیں تو کھول شہر کو سیلاب  لے گیا
ظلمت کو ضیا، جالب کی یادگار نظًم
نصرت فتح علی خان کی یاد میں
 

 

آپ کی ویڈیوز

آپ ہمیں اپنی ویڈیوز ارسال کر سکتے ہیں۔ اگر وہ ہمارے معیار کے مطابق ہوئیں تو ہم اُنہیں ضرور شامل کریں گے۔ اس کے علاوہ یہ ہم آپ کی یوٹیوب پر موجود ویڈیو کو ان صفات پر بھی شامل کر سکتے ہیں اس سلسلے میں ہم سے رابطہ کریں۔
 

 

کیا آپ جانتے ہیں؟

آپ مشاعرہ ویڈیو یا آڈیو فایلز کو اردو میں سرچ کر سکتے ہیں ۔
 

   
موسیقی مضامین خصوصی ویڈیوز شاعری مشاعرہ آڈیو مشاعرہ ویڈیوز
 
مضامین

 موت سے زندگی کی طرف ۔ از حسن نثار

 پہلے کچھ آنسو ہوجائیں،صدیوں پہلے جب میں گورنمنٹ کالج لائلپور میں بطور?فرسٹ ائیر فول? داخل ہوا تو سانولے رنگ اور پھول سے نرم لہجے والے اک سینئر نے رضاکارانہ طور پر میری رہنمائی کا کام اپنے ذمہ لے لیا۔ خصوصاً مباحثوں کے لئے تقریروں کی تیاری۔ یہ افتخار نسیم تھا جو بعدازاں پردیس جابسا لیکن میرے لئے اس کی شفقت میں کبھی کمی نہیں آئی۔ چند ماہ پہلے کی بات ہے افتی بھائی کی کتاب لانچ ہوئی تو مجھے بطور مہمان خصوصی لائلپور طلب فرمایا۔ تب میں نہیں جانتا تھا کہ اس بلا کے شاعر اور بے پناہ نثر نگار سے یہ میری آخری ملاقات ہے۔ وہ واپس شکاگو چلے گئے میں اپنے?بیلی پور? لوٹ آیا کہ اب اچانک خبر آئی کہ ساری زندگی سفر میں گزاردینے والا یہ خوبصورت خانہ بدوش شکاگو سے بھی بہت آگے کسی ایسے شہر کی طرف روانہ ہوگیا جہاں جانا تو طے ہے،واپس آنا ممکن نہیں، 23 جولائی2011ء کو وہ ہمیشہ ہمیشہ کے لئے رخصت ہوگیا۔ افتخار نسیم کا ہی اک شعر ہے

طاق  پر جزدان  میں  لپٹی   دعائیں  رہ گئیں
چل  دئیے  بیٹے سفر پر گھر میں  مائیں رہ گئیں

عدیم ہاشمی مرحوم اور افتخار نسیم عرف افتی بھائی دونوں آپس میں قریبی رشتہ دار تھے، دونوں ہی غضب کے شاعر، دونوں ہی میرے قریبی دوست اور دونوں ہی امریکہ میں آسودہ خاک ،عدیم ہاشمی کا شعر ہے

تمام  عمر کا  ہے ساتھ  آب و ماہی  کا
پڑے جو وقت تو پانی نہ جال میں آئے

سچ ہے کہ مرے ہوئے کے ساتھ کوئی نہیں مرتا لیکن قسم فرشتہ اجل کی، ہر پیارے کی موت کے ساتھ آدمی خود بھی تھوڑا سا مرجاتا ہے جیسے میں افتی بھائی کی موت کا سن کر تھوڑا سا مزید مرگیا ہوں۔افتخار نسیم کا اک اور شعر

شور کرتے  ہیں  پرندے پیڑ  کٹتا  دیکھ کر
شہر کے دست ہوس میں کوئی آری دے گیا

اور اب آخر یہ صرف اتنی سی گزارش کہ زندگی اور موت ایک ہی سکے کے دورخ ہیں?زندگی اور موت سگی بہنیں ہیں سو ہوسکے تو زندگی سے چند لمحے نکال کر افتخار نسیم اور عدیم ہاشمی کے لئے دعا فرمائیے کہ ایسے لوگ کسی بھی معاشرہ کے ماتھے کا اصل جھومر ہوتے ہیں، یہ علیحدہ بات کہ ہمارے اجتماعی ماتھے پر مکروہ ترین نقلی جھومر جھول رہے ہیں جنہیں بالآخر رخصت ہونا ہوگا??اور اگر ایسا نہیں ہوتا تو اس معاشرہ کو رخصت ہونا ہوگا!

واپسی

اپنے احباب کو یہ صفحہ بھیجیں
جملہ حقوق بنام اردو لائف محفوظ ہیں۔ نجی پالیسی ہمارے بارے میں استعمال كی شرا ئیط ہمارا رابطہ