اردو پیڈ اردوای میل اردو لائف ویڈیو محفلِ موسیقی ادبی افق بات سے بات محفلِ مشاعرہ شاعری تصویری کارڈ فلیش کارڈ عید کارڈ سرورق
 رابطہ کریں تلاش کریں

توجہ فرمائیں

شاعری  کو سننے کے لیئے آپ کے کمپیوٹر پر ریل پلیر انسٹال ہونا ضروری ہے۔ اگر آپ کے پاس یہ موجود نہیں ہے تو اسے مفت ڈاون لوڈ کرنے کے لیئے
یہاں  کلک کریں۔

خصوصی ویڈیوز

افتخار نسیم کی یاد میںاضافہ
لفظ کو پھول بنانا تو کرشمہ ہے فراز، ڈاکومنٹری
آنکھیں تو کھول شہر کو سیلاب  لے گیا
ظلمت کو ضیا، جالب کی یادگار نظًم
نصرت فتح علی خان کی یاد میں
 

 

 بہترین شاعری

اور بھی دُکھ ہیں زمانے میں
پتھر
جاناں جاناں
خوبصورت موڑ
چاند چہرہ ستارہ آنکھیں
سرِ منبر وہ خابوں کے محل تمیر

کیا آپ جانتے ہیں؟

محفلِ مشاعرہ اب صرف یونی کورڈ میں دستیاب ہوگا، رومن اردو اور تصویری سلسلے کا خاتمہ کیا جا رہا ہے۔

احمد فراز | محفلِ مشاعرہ

محفلِ مشاعرہ
احمد فراز کا کلام اُن کی اپنی آواز میں
نعت
نذرِ  ذولفقار علی بھٹو
یہ میری غزلیں یہ میری نظمیں
پیشہ  ور  قاتلو 
* محاصرہ
یہ تو اس کا ہی کرشمہ ہے فسوں ہے یوں ہے
*سنا ہے لوگ اُسے آنکھ بھر کے دیکھتے ہیں
اماں مانگو نہ ہم سے دل فگاران
گرفتہ دل عندلیب گھائل گلاب دیکھے
*ہر کوئی دل کی ہتیھلی پہ ہے صحرا رکھے
جنہیں زعم ِ کماں داری بہت ہے
کب تک فگار دل کو تو آنکھوں کو
*نہ مرادی کا یہ عالم بھی تو
قربِ جاناں کا نہ میخانے کا موسم
*رفاقتوں میں پشیمانیاں تو ہوتی ہیں
صاحبو پیچ بہت رکھتے ہو دستار کے بیچ
*ساقیا ایک نظر جام سے پہلے پہلے
*سلسلے توڑ گا وہ سب ہی
*اُس نے سکوتِ شب میں بھی اپنا پیام رکھ دیا
زندگی کی اب نئی رسمیں بنا دی جائیں گی
مثالِ دستِ زلیخاں تپاک چاہتا ہے
تجھے ہے مشقِ ستم کا ملال ویسے ہی
عاشقی میں میر جیسے خاب مت دیکھا کرو
سبھی کہیں مجھے غمخوار کے علاوہ بھی
اگرچہ زور ہواؤں نے ڈال رکھا ہے
وحشتیں بڑھتی گئیں ہجر کے آزار کے ساتھ
اُس نے سکوتِ شب میں بھی اپنا پیام رکھ دیا
یہ کیا کہ سب سے بیاں دل کی حالتیں کرنی
دوستو یوں بھی نہ رکھو خم و پیمانہ کھلے
سلسے توڑ گیا وہ سبھی جاتے جاتے
وحشتِ دل صلہِ آبلاپائی لے لئے
چلو وہ عشق نہیں چاہنے کی عادت ہے
وہ تفاوتیں ہیں میرے خدا کہ یہ تو نہیں
جاناں جاناں
آنکھ سے دور نہ ہو دل سے اُتر جائے گا
اس قدر مسلس تھیں شدیتیں جدائی کی
یہ شہر سحر زد ہے
سنا ہے لوگ اُسے آنکھ بھر کے دیکھتے ہیں
بن باس
بیروت
دوسری ہجرت
*گونگی کوئلیں
ہواؤں کی بشارت
ہم  اپنے  خواب  کیوں بیچیں
* خوابوں  کے بیوپاری
جلاد
* کالی  دیوار
* میں اور تو
مردود
جاناں  جاناں
قیدِ تنہائی
*قاصد کبوتر
شائی لاک
واپسی
واپسی ، اور تیرے شہر سے جب
واپسی
واپسی
قیدِ تنہائی
کالی دیوار
نہیں ایسا نہیں ہونے دینا
محاصرہ
محاصرہ، 2005 کی ریکارڈنگ
رونے سے ملال گھٹ گیا ہے




اپنے احباب کو یہ صفحہ بھیجیں
جملہ حقوق بنام اردو لائف محفوظ ہیں۔ نجی پالیسی ہمارے بارے میں استعمال كی شرا ئیط ہمارا رابطہ